پرویز مشرف کے خلاف اوریا مقبول جان کے کالم —امت مسلمہ کا مجرم— کا جواب

بزعم خود، قوم کے مصلح اور مذھبی فکر کے داعی جناب اوریا مقبول جان نے مورخہ ۱۱ جنوری 2014ء کو اپنا گمراہ کن کالم بعنوان ’’امت مسلمہ کا مجرم‘‘ لکھا اور سابق صدر پرویز مشرف کو شدید ترین تنقید کا نشانہ بنایا۔ یہ کوئی نئی بات نہیں۔ موصوف اس سے پہلے بھی سابق صدر کے خلاف اپنے دل کی بھڑاس نکالتے رھے ھیں۔ اظہار رائے ان کا حق ھے، اور اس سے انہیں کوئی محروم نہیں کر سکتا۔ البتہ جب کالم نگار اپنے قلم کو مذھب کی سیاھی میں ڈبو کر کسی کی کردار کشی پر اتر آئیں اور قارئین کو جذباتی طور پر یرغمال بنا کر حقائق مسخ کرنے یا انہیں توڑ مروڑ کر پیش کریں، تو اس کا جواب تحریر کرنا، اور ان کو آئینہ دکھانا ھمارا حق ھے۔

یاد رھے کہ کچھ ماہ قبل، قوم کی ہونہار اور قابل فخر بیٹی ملالہ یوسف زئی کے خلاف موصوف اوریا مقبول جان نے نہایت ڈھٹائی سے ایک فریب آلود کالم لکھا اور اس کے بعد مختلف ٹی وی چینلز پر بیٹھ کر ملالہ کے خلاف لوگوں کو اکساتے رھے۔ گزشتہ دنوں، موصوف نے قائد اعظم کی ۱۱ اگست 1947ء کو قانون ساز اسمبلی میں کی گئی معرکتہ الآراء تقریر کو متنازعہ بنانے اور اسے سیکولر طبقے کی سازش قرار دینے کے لئے ایڑھی چوٹی کا زور لگایا۔ ملالہ یوسف زئی کے معاملے میں اسی بلاگ پر ایک مدلل جواب تحریر کیا گیااور اوریا مقبول جان کے فریب کا پردہ چاک کیا گیا۔ اسی طرح بیشتر دوستوں نے قائد اعظم کی تقریر کے اصل حوالہ جات، تاریخی اور ناقابل تردید ثبوتوں کے ساتھ پیش کئے اور موصوف کو بے نقاب کیا۔اپنی روایتی بد دیانتی کے تسلسل کو جاری رکھتے ھوئے ۱۱ جنوری کے کالم میں اوریا مقبول جان صاحب نے سابق صدر پرویز مشرف کے خلاف عوام میں نفرت اور اشتعال دلوانے کے لئے نہ صرف حد درجے دروغ سے کام لیا، بلکہ حسب سابق مذھب کو اپنے اس مزموم مقصد کے لئے استعمال کیا۔ یہ تحریر موصوف کے گمراہ کن کالم کے جواب میں پیش کی جارھی ھے، جس میں ان کو ایک بار پھر آئینہ دکھا یا جائے گا۔

واضح رھے کہ اوریا مقبول جان کو اس بات سے غرض نہیں ھے کہ پرویز مشرف پر چلنے والا مقدمہ کتنا عرصہ چلتا ھے یا اس کا کیا نتیجہ نکلتا ھے، لہٰذا اس تحریر میں اس مقدمے اور اس کے سیاسی، جمہوری یا آئینی نکات اور پہلوؤں پر کوئی گفتگو نہیں کی جائے گی۔

کالم نگار نے اپنی تحریر کا آٖغاز ایمل کانسی کو امریکہ کا دشمن اور پاکستانی قوم کا ھیرو قرار دے کر کیا۔ گویا ان کے نزدیک اس بات کی ھرگز کوئی اھمیت نہیں کہ پاکستان کا کوئی شہری دوسرے ملک میں جا کر قانون کو اپنے ھاتھ میں لے اور قتل و غارت اور دھشت گردی کرتا پھرے۔اس کے بعد فرار ھو کر واپس پاکستان میں آچھپے اور دنیا بھر میں اپنے ملک کو شرمندہ کروائے۔ ان کے نزدیک ایسے افراد ھیرو ھیں۔ ان کی اس منطق کی بنیاد پر پاکستان کے جن نام نہاد سپوتوں نے دھشت گردی کے ذریعے دنیا بھر میں اس سرزمین کو ذلیل و خوار کیا ھے، وہ تمام بھی پھر ھیرو ھوئے۔ اگر اوریا مقبول جان کے فلسفے پر عمل کیا جائے، تو اس امر میں رتی بھر شبہ نہیں رھنا چاھئیے کہ پاکستان ایک عالمی دھشت گرد ملک ھے، جو دنیا بھر میں بدمعاشی، بدامنی اور قتل و غارت کرنے والے افراد کو اپنا ھیرو سمجھتا ھے۔ اگر یہ الزام اس قوم کو قبول ھے، تو بسم اللہ کیجئے اور اوریا مقبول جان کو امور سلطنت سونپ دیجئے۔

Orya - I

ذرا آگے چلئے، تو اوریا مقبول جان کا جذبہء جہاد و قتال سے بھرپور قلم یہ الفاظ اگلتا ھے

اسامہ بن لادن کی شہادت ابھی کل کی بات ھے۔

Orya - II

ناطقہ سر بگریباں ھے، اسے کیا کہیے؟ ایک عالمی دھشت گرد، جس نے دنیا بھر میں جہاد کے نام کو قتل و غارت کا ھم معنی بنا دیا، کی ھلاکت کو کالم نگار ‘‘شہادت’’ قرار دے رھے ھیں۔ امریکہ دشمنی اور طالبان پرستی، ایسے ھی تشدد پسند ذھن پیدا کرتی ھے، جو نہ صرف اسامہ بن لادن اور حکیم اللہ محسود کو، بلکہ امریکہ کے ھاتھوں ھلاک ھونے والے کتے کو بھی شہید قرار دے ڈالیں۔

اوریا مقبول جان، کیا آپ کو معلوم ھے کہ اسامہ بن لادن، عالمی دھشت گرد تنظیم القاعدہ کا بانی تھا۔ کیا آپ جانتے ھیں کہ 1992ء میں جب سومالیہ میں پانچ لاکھ افراد قحط کے ھاتھوں مارے گئے، تو اقوام متحدہ کی قراردادوں کے تابع وھاں ریلیف آپریشن کا آغاز ھوا۔ القاعدہ نے اس مشن میں حصہ لینے کے لئے جانے والے امریکی فوجیوں کو مارنے کی غرض سے دو بم دھماکے کرائے۔ ان میں کئی زخمیوں کے علاوہ ایک آسٹریلوی سیاح اور ایک ھوٹل ملازم ھلاک ھوگئے۔ بعد میں القاعدہ نے ایک فتویٰ جاری کیا اور دھشت گردی کی اس کاروائی کو اسلامی حوالے سے درست قرارد دیا۔

کیا آپ کو معلوم ھے کہ امریکہ میں غیر قانونی طور پر داخل ھونے والے رمزی یوسف، جس نے 1993ء میں ورلڈ ٹریڈ سنٹر پر حملہ کرکے چھ افراد ھلاک اور ھزار سے زائد زخمی کئے، نے افغانستان میں واقع القاعدہ کے ٹریننگ سنٹر سے ٹریننگ لی تھی۔

کیا آپ کو یاد ھے کہ 1996ء میں اسامہ بن لادن نے امریکی صدر بل کلنٹن کے قتل کی منصوبہ بندی کی۔

کیا آپ بھول گئے کہ 1998ء میں اسامہ بن لادن نے امریکی فوجیوں اور شہریوں کے قتل عام کا فتویٰ جاری کیا اور اسے مسلمانوں پر فرض قرار دیا۔ اس ضمن میں انہوں نے القرآن الحکیم کی متعدد آیات بھی پیش کیں اور گویا ثابت کیا کہ (نعوذ باللہ) اسلام ایسی درندگی اور قتل و غارت کا حکم دیتا ھے۔

اوریا مقبول جان صاحب! کیا آپ فراموش کر گئے کہ 1998ء میں امریکی ایمبیسیوں پر حملوں میں القاعدہ نے سینکڑوں افراد کو ھلاک اور ھزاروں کو زخمی کیا۔

واضح رھے کہ القاعدہ کی دھشت گردی کی یہ چند مثالیں 9/11 کے سانحے سے پہلے کی ھیں۔ بعد میں ھونے والے فساد کے بارے میں سب ھی جانتے ھیں، لہٰذا ان کا ذکر پھر کسی وقت پر موقوف کئے دیتے ھیں۔ اسامہ بن لادن کو شہید قرار دے کر اوریا مقبول جان نے ان تمام دھشت گرد کاروائیوں کو درست اور عین جہاد قرار دیا ھے۔ ھمیں امید ھے کہ وہ خود یا کم از کم وہ اپنے بچوں کو بھی ایسا ھی مجاھد بنانا پسند کریں گے۔ اگر آج بد قسمتی سے دین اسلام کو دھشت گردی سے منسوب کیا جاتا ھے یا اسلامی دھشت گردی کی تکلیف دہ اصطلاح وجود میں آئی ھے، تو اس کا سہرہ اوریا مقبول جان جیسے مبصرین اور ان کے پسندیدہ دھشت گردوں کے سر جاتا ھے۔

اپنے گمراہ کن کالم کو جاری رکھتے ھوئے موصوف، سابق صدر پاکستان پرویز مشرف کو امت مسلمہ کا ملزم قرار دیتے ھوئے لکھتے ھیں

اگر یہ امت زندہ ھوتی، تو مشرف جمہوریت کے نہیں امت مسلمہ کے ملزم کی حیثیت سے کٹہرے میں کھڑا ھوتا۔

Orya - III

حیرت بالائے حیرت۔ اوریا صاحب! اگر یہ امت زندہ ھوتی، تو آج آپ کا نام و نشان بھی مٹ چکا ھوتا کہ کیسے دیدہ دلیری سے ایک شخص دین اسلام کا لبادہ اوڑھے، جھوٹ اور منافقت کی ملمع کاری کئے اس قوم کو فریب دے رھا ھے اور اپنے قلم کی آبرو بیچ کر ایک انتہا پسندانہ نسل کی آبیاری کر رھا ھے۔ اگر یہ امت زندہ ھوتی، تو آپ کو کبھی عالمی دھشت گردوں کو شہید کہنے کی جراءت نہ ھوتی۔ اگر یہ امت زندہ ھوتی، توآپ کو کبھی میرے دین اور رسول برحق صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی پاکیزہ اور انسانیت پرست تعلیمات کو قتل و غارت سے آلودہ کرنے والی دھشت گردی کو جہاد کہنے کی جسارت نہ ھوتی۔ اگر یہ امت زندہ ھوتی، تو میرے پچاس ھزار ھم وطنوں کو شہید کرنے والی تحریک طالبان کی تعریف میں کالم لکھتے ھوئے اوریا مقبول جان کو بیس مرتبہ سوچنا پڑتا۔ اگر یہ امت زندہ ھوتی، تو موصوف کوشام میں بغاوت کرنے والے القاعدہ کے بے رحم جنگ جوؤں کو حضرت امام مہدی کا سپاھی قرار دینے کی ھمت نہ ہو پاتی۔ یہی تو رونا ھے کہ یہ امت زندہ نہیں۔ اس امت کا زندہ نہ ھونا ھی آپ جیسے بے ضمیر اور فریبی لکھاریوں کے لئے آکسیجن ھے۔

پرویز مشرف پر وار کرتے ھوئے اوریا مقبول جان لکھتے ھیں

تم نے چار سو سے ذائد مسلمانوں کو پیسے لے کرآگے بیچااور پھر اس پر اتراتے بھی رھے۔

Orya - IV

آپ کی پیشہ وارانہ اور عیارانہ چال بازی پر افسوس۔ گویا آپ کے نزدیک پاکستان، کسی طوائف کا کوٹھا ھے کہ جب جس کا جی چاھے ، چلا آئے اور اپنی ھوس مٹا کر لوٹ جائے۔

محترم! پاکستان ایک جوھری طاقت ھے، کوئی عام رہ گزر نہیں۔ کسی غیر ملکی اور بالخصوص کسی بھی دھشت گرد کو ھرگز یہ حق حاصل نہیں کہ وہ سرحد عبور کر کے یہاں اپنی کمین گاھیں بنائے اور یہاں سے کسی دوسرے ملک میں تخریب کاری کرتا پھرے۔ کیا آپ مجھے یہ حق دیں گے کہ میں آپ کے گھر کا دروازہ پھلانگ کر آپ کی اجازت کے بغیر اندر داخل ھو جاؤں اور وھیں اپنا ڈیرہ ڈال کر بیٹھ جاؤں؟ افغانستان اور دوسرے ممالک سے عسکریت پسند اور دھشت گرد، بغیر کسی دستاویز کے غیر قانونی طور پر جب پاکستان میں داخل ھوں، تو اس کا منہ توڑ جواب دیا جانا چاھئیے۔ یہی پرویز مشرف نے بھی کیا۔ اور ایسے دھشت گرد جن کی عالمی اداروں اور حکومتوں کی جانب سے باؤنٹی یا سر کی قیمت لگی ھوئی تھی، ان کو بر وقت کاروائی کر کے پکڑا گیا ۔ ایسے تمام دھشت گرد عناصرکو جب ان کے اپنے ممالک نے واپس لینے سے انکار کیا، تو انہیں ان عالمی اداروں یا حکومتوں کے حوالے کر دیا گیا، جنہیں وہ مطلوب تھے۔ ظاھر ھے کہ ایسا ھی کرنا چاھیئے تھا۔ مگر کیا کریں کہ اوریا مقبول جان، کمال معصومیت سے اسے ایک ھی جملے میں یہ کہہ کر ختم کردیتے ھیں کہ پرویز مشرف نے پیسے لے کر مسلمانوں کو آگے بیچا۔

In the line of fire - Page 237

حقائق سے کوسوں دور اور طفلانہ جذبات سے مغلوب کالم نگار آگے لکھتے ھیں

اس مملکت خداد پاکستان میں اور یہاں بسنے والی امت مسلمہ کے اخلاق و اقدار کو بگاڑنے، ان کے اندر فحش کو عام کرنے، ان کے مدرسوں اور مسجدوں پر ٹینکوں سے حملہ کرنے اور ان کی عورتوں اور بچوں کو بموں کی آتش میں بھوننے کے الزامات اس سے سوا ھیں، لیکن ان پر کوئی آواز بلند نہیں کرتا۔

Orya - V

یہ جملے لکھتے ھوئے کالم نگار مبالغہ گوئی کی سیڑھی پر کافی اوپر تک چڑھے ھوئے محسوس ھوتے ھیں۔ بہتر ھوتا کہ وہ ان نام نہاد الزامات کی کچھ تفصیل بھی لکھ ڈالتے، تاکہ ھمیں اس کا تجزیہ کرنے میں سہولت رھتی۔ خیر،ھم اوریا مقبول جان صاحب سے یہ پوچھنا چاھیں گے کہ معصوم اور نا پختہ ذھنوں میں جنت کے باغات اور شہد کی نہروں کے کنارے پر بیٹھی ھوئی توبہ شکن حوروں کا اشتباہ انگیز تصور ڈالنے والوں کے بارے میں آپ کی کیا رائے ھے۔ ان حوروں کے لمس اور صحبت کو پانے کی ھوس میں خود کش حملہ آور بن جانا کیسا فعل ھے؟ اگر تو یہ سب بہت اچھا اور عین اسلامی ھے، تو آپ اس جہاد میں عملی طور پر حصہ کیوں نہیں لیتے۔ کیا آپ پر جہاد فرض نہیں ھے؟ کیا وجہ ھے کہ آج تک آپ کے کسی بیٹے نے جہاد کے میدان میں خود کش حملہ نہیں کیا یا تحریک طالبان کے وحشیوں کی طرح کسی کو زبح نہیں کیا؟

اور اگر یہ سب کچھ بہت برا اور غلط ھے اور اسلام کی تعلیمات کے منافی ھے، تو پھر آپ کا قلم ان نام نہاد جہادیوں اور خود کش حملہ آوروں کی تعریفیں کرتا تھکتا کیوں نہیں ھے؟ آپ کو پرویز مشرف کی وجہ سے امت مسلمہ کا اخلاق و اقدرابگڑتا ھوا تو دکھائی دیتا ھے، مگر مساجد، امام بارگاھوں، مزاروں، گرجا گھروں اور بازاروں میں دندناتے ھوئے خود کش حملہ آوروں سے دین اسلام کا چہرہ اور اقدار مسخ ھوتی محسوس نہیں ھوتیں؟

Lal Masjid

آپ کا ذھن رسا مدرسوں اور مساجد پر ٹینکوں سے حملے ھوتا ھوا تو دیکھ لیتا ھے، مگر افسوس کے ان کے اندر براجمان تکفیری دھشت گرد دکھائی نہیں دیتے۔ بات بے بات مذھب کو اپنے مذموم مقاصد کے لئے دلیل کے طور پر استعمال کرنے والا کالم نگار ،مسجد ضرار کا واقعہ کیوں بھول جاتا ھے، جہاں میرے رسول اللہ صلہ اللہ علیہ وآلہ وسلم کو میرا رب خود یہ کہتا ھے کہ اس مسجد سے مسلمانوں کو نقصان پہنچایا جا رھا ھے۔ کیا موصوف اوریا مقبول جان کو یہ معلوم نہیں کہ لال مسجد اور ان جیسی کتنی ھی مساجد اور مدرسوں میں ھزاروں افراد کو دھشت گردی کی تربیت دی گئی اور پاکستان بھر میں خود کش حملے کرنے کے لئے پھیلایا گیا۔

Al-Quran - Surah Al-Tauba

پرویز مشرف کو امت مسلمہ کا مجرم قرار دیتے ھوئے اوریا مقبول جان یہ کیوں بھول جاتے ھیں کہ سورہ النساء میں اللہ تعالیٰ خود فرماتا ھے، ‘‘اے ایمان والو! اللہ کی اطاعت کرو، رسول کی اطاعت کرو اور اولی الامر کی اطاعت کرو۔’’ کیا کالم نگار کو یہ معلوم نہیں کہ پرویز مشرف اپنے دور حکومت میں پاکستان کے اولوالامر تھے؟ کوئی انہیں پسند کرے یا نہ کرے، ان کی پالیسیاں درست ھوں کہ غلط ھوں، ان سب سے قطع نظر، وہ اس مملکت کے صاحب اختیار تھے ۔ کیا آپ نہیں جانتے کہ اسلام میں یونٹی آف کمانڈ کی کتنی اھمیت ھے۔ اگر آپ کی طرح ھر شخص اپنی ڈیڑھ اینٹ کی مسجد بنا کر دوسروں پر یا حاکم وقت کے خلاف فتوے دینا شروع کر دے، تو کیا یہ وطن کی خدمت ھے یا قوم کو تقسیم کرنے کی سازش؟

Al-Quran - Surah Al-Nisa

کیا موصوف کو معلوم نہیں کہ سورہ المائدہ میں اللہ تعالیٰ ایک انسان کے قتل کو کل انسانیت کا قتل قرار دیتا ھے؟ کیا موصوف یہ نہیں جانتے کہ سورہ البقرہ میں فتنے کو قتل سے بھی بدتر جرم قرار دیا گیا ھے۔ کیا موصوف کو یاد دلانا پڑے گا کہ ان واضح احکامات کی موجودگی میں دھشت گرد کتنے قبیح جرائم کا ارتکاب کر رھے ھیں؟ کیا ایسے درندوں کو صرف اس بنیاد پر درگزر کر دیا جائے کہ وہ اوریا مقبول جان کے حمایت یافتہ ھیں یاموصوف کی خود ساختہ مذھبی تشریح کے مطابق کوئی بہت نیک فریضہ انجام دے رھے ھیں۔

ھمیں اس سے ھرگز کوئی غرض نہیں ھے کہ آپ پرویز مشرف سے اختلاف رکھیں اور اپنی تحریر کے ذریعے اپنی رائے کا اظہار کریں۔ ترقی پسند معاشرے میں آزادیء رائے کی بہت اھمیت ھے۔ تاھم ایسی صورت حال میں جب ھمارا ملک حالت جنگ میں ھے اور ھماری بقا خطرے کے نشان تک پہنچ چکی ھے، آپ کو یہ اختیار نہیں دیا جا سکتا کہ آپ اس قوم کو دھشت گردوں کی حمایت کے لئے اکساتے پھریں۔

Orya column - VIII

اوریا مقبول جان صاحب! اگر آپ میں انسانیت اور دین کی سچی رمق موجود ھوتی، تو آپ پرویز مشرف صاحب کے بارے میں ایسے لغو الزامات نہ لگاتے۔ اس کے برعکس، آپ دھشت گردوں کو امت مسلمہ کا مجرم قرار دیتے۔ ابھی بھی وقت ھے کہ سنبھل جائیے ۔ اگر آپ ایسا نہیں کرتے، تو کہیں ایسا نہ ھو کہ بروز حشر، آپ کے اوپر بھی کوئی فرد جرم عائد ھو جائے ۔ ڈرئیے اس وقت سے جب بذات خود آپ کوھی امت مسلمہ کا مجرم قرار دے دیا جائے۔ ایسا مجرم، جس نے قرآن کے واضح احکامات کی خلاف ورزی کرنے والے دھشت گردوں کو اپنا ھیرو قرار دیا اور اسلام کو دھشت گردی سے جوڑنے کے لئے اپنے قلم کی حرمت پامال کر ڈالی۔

The Noble Quran

( تحریر: سبز خزاں)

Advertisements

36 thoughts on “پرویز مشرف کے خلاف اوریا مقبول جان کے کالم —امت مسلمہ کا مجرم— کا جواب

  1. بلّے وئی۔
    جیوندا رہ۔
    اج کل دے حالات وچ ایہو ای “دعا” دتّی جا سکدی اے۔
    لیکن فیر وی۔۔
    انشورنس کروا لینڑی چاھیدی اے۔
    تاکہ پچھلیاں دی دال روٹی چلدی رھوے۔

  2. oria maqbool jan zbr10 admi hain….or jwb denay wala musharraf haramzaday ka mulazim jhota ghaddar he…jwb denay wala kutta he

    • We know Oriya Maqbool and his financiers. Hamid Mir and Ansar Siddiquo (The News) and Irfan Siddiqui are employees of Nawaz Sharif family. Now, Irfan Siddiqui has been appointed an Advisor to the Prime Minister. He has been tasked to run a campaign against Pervez Musharraf. Nawaz Sharif is using state resources for revengeful activities. Where is NAB ?

    • shaid commando sahib nihayat adab sey guzarish hey k Gali galoch sey gurez krain Q k islam main iss trah ki ijazat ni di hey k ap daleel k bajaey galioon sey muqabla krain nazriyati ikhtalaf apni jaga pey lakin uska jawab ap bjaey galion k daleed sey dain to wo aik muhazib tareeqa ho ga. Bahut shukria

    • His abusive language indicates that he is some Indian Bollywood or Brothelwood product and speaking in his mother’s tongue. Usually Indian Hindus, Pakistani fraud gangsters turned politicians and politicians turned PCO CJs, hate Musharraf, as he booted them all equally. The funniest and most tragic part is that the humiliation of ex Chief of Pakistan Army, in the name of “Ghaddari” is being enjoyed equally by the Indian Hindus and Pakistani politicians and judges. In fact all educated and genuine patriots are absolutely and whole heartedly with Musharraf.

  3. I thought this Jan fellow was really a sensible man but has proved even lower than dust. He should realize the damage Bin Laden & his deranged followers did to Muslim Ummah. The problems faced today by Islamic world is a gift of these thugs who lived a licentious life in caves and mountains and became instrumental in getting millions of Muslims killed. This man with all his bandits must be burning in hell-fire. Pakistan is very unfortunate not to understand the severity of problem and the only one who can set things right is MUSHARRAF.

  4. انصار عباسی اور اوریا مقبول جان،
    عقل سے پیدل اُن ذی حیات میں شامل ہیں جن کے پاس ’’اطلاعات‘‘ تو ہوتی ہیں لیکن ’’علم‘‘ ان کو چھو کر بھی نہیں گزرتا۔
    ان کا تعلق ’’مذھب اسلام‘‘ کےنام پر آباء و اجداد کے(عقل کے) اندھے پیروکار ، ’’مسلمان‘‘ قبیلے سے ہے۔

  5. It is a very fine article, written with logic. Never thought that people like Oria Maqbool could be that a big “Munafiq” and misleading the people. Surprisingly this thug has completely changed the context of apprehension and disposal of International criminals hiding in Pakistan. In the presence of people like Oria we shouldn’t blame Hindus, Jews or Americans and Germans to break Pakistan. How cheap people become to earn illicit honorarium?
    Musharraf gave 40 years of Exemplary Services to Pakistan in Army uniform. He booted Indian Army (five times larger in size) at Kargil. Enemy General VK Singh openly appreciated Musharraf’s courage to have stayed with his troops 15 miles inside Indian territory and accused own Indian Army, for not taking any actions. Here are these classical loyals.
    (1) The PM hijacked the plan carrying General Musharraf, serving Chief of Pakistan Army and forced it to land in India, thus handing over his serving Army Chief to Indians.
    (2) Oria Maqbool and other so called intellectual claiming Musharraf, liable to be hanged for his atrocities on the killers of Pakistani people including, soldiers, women and children. These pseudo intellectuals are professing the sale purchase of youth being used as suicide bombers and their use for blowing up other innocents.
    (3) The PM and the PCO CJ have framed “High Treason Case” against Musharraf.
    In1958 Pundit Nehru had rightly predicted that Drama of Pakistan wouldn’t last for more than six months henceforth. That was another dictator Ayub Khan, who did dirty Ghaddari like Musharraf, which gave 65 years of more life to Pakistan.
    A nation who’s Army Chief is declared “Ghaddar” after 40 years of Examplary Army service and commanding the whole Army, just answere my questions below:-
    (a) Are we not the most “Beghairat” and “Manhoos” nation on God’s earth?
    (b) Haven’t they rightly stamped us “The Most Corrupt Nation of the World”?
    (c) Do we really have the right to exist on God’s earth?

  6. Freedom of media and hundreds of TV channels has provided a platform for any Tom, Dick and oriya enjoy their 22 minutes of fame on tv screen. Usually these so called analysts are for sale and for money, they will sell their own mothers.
    Khalid, answers to yours questions are yes, yes and yes. Last yes is to taste the fruit of our jihalut, stupidity and baygherti. Our next medal will be in Ehsan Faramoshi.

  7. Main yeh bat nahi kroon ga k musharaf sahb sahi hain ya taliban sahi hain iska faisla ap khud kr lijiey ga. Lakin merey chand aik sawal hain. 1. Kya kissi qaidi ko chahey jangi qaidi hi q nah ho hath paon bandh k qatal krney ki ijazat islam main moujoood hey? Ghazwa e badar main kitney kafir qaidi jo islam k khilaf aur Rasool e pak k khilaf hathyar utha k laey they kya unhain qatal kr dia gaya tha? Ager ni tou phr aik insan ko jo ap ki qaid main hey ussey zibah krney ka jawaz kahan sey paida kia gaya? Kya islam Qaidiooon k sath husn e sulook ka dars ni deta? Kya Islam kissi bhi insaan ko chahey wo kafir ho ya musalman apney gher main betha ho aur jang k maidaan main sharik nah hoa ho kya ussey qatal ki ijazat deta hey? Kya public place pey bomb dhamakey ka kaheeen bhi islam main jawaz moujood hey? ager aisa hota to Fateh Makka k waqt sarey kuffar k gheron ko jalla q ni dia gaya? aur sarey kuffaar ko qatal q ni kr dia gaya? Q aam mafi ka ilan kia gaya? wahan bhi ager do char khud kush dhamakey ho jatey aur makka k bazaaron main kuffar ko qatal kr dia jata ?? Q akhir q Rasool e Karim (s.a.w) ney taif ki wadi main kuffar ki sakhtiaan berdasht krney k bawujoood un k liey bad’dua takn na ki… Aik bhi waqia Rasool e Karim (s.a.w) ki zindagi sey btaya jaey jis main unhon ney aik bhi aisey shakhs ki jaan ley li ho jo nahita aur bebas tha?? Yeh konsa islam hey Khuda k liey zara sochain aur shiddat pasandi aur dehshat gerdi aur intaha pasandi sey bahir ain. Aur dunia main aik muhazib shehri ka kirdar ada krain. Khuda k liey apney ikhlaq sey logon ko islam ki traf raghib krain bjaey dehshat gerdi k. Yad Rakhain tumhara Rusool, Rusool e Ikhlaq hey aur Quran ney un k liey jo khoobi byan ki hey wo Ikhlaq k allaa tareen namona honey ki hey.

  8. I fully appreciate your true and patriotic comments and condemn Islamic IMPOSTERS like OryaMaqbool,who are playing the role of MUNAFIQ while trying to show that they are good muslims

  9. Musalman apna mohsin ka sath asay hi bartayoo kartey han jase ke woh pervaiz musharf ka sath kar rahee han.
    musalmano na IMAM Hussain ,Hazrat Ali,Hazrat Usman Sab ka sath yahee kia ha.

  10. Pingback: اوریا مقبول جان کے کالم ‘‘امت مسلمہ کا مجرم’’ کا جواب | Rationalist Pakistan: Rationalist Society of Pakistan — Rationalist Pakistan: Rationalist Society of Pakistan

  11. Good try, but in your response you never try to deny pr clearly the facts that Mr. Maqbool Jan presented:
    1) Giving Air Bases
    2) Sealing our people (Aafia Siddiqui and many more)
    3) Giving Afghan Safir
    4) Attack on Lal Masjid

    All it looks like a lame and a shameful cowardly attempt to make author’s character bad, Allah will dishonor Musharraf first then he lives or got hanged or get impressed for life done not matters.

    When Allah made decision to punish someone or some nation, first he crush what that man / nation proud on, this is the historical fact, did you ever read Quran?

    So Musharaff said I do not afraid of anything? now he is proven coward, hiding in a hospital, even kids like Bilawal said Oh “The Coward”…

    My response is an eye opener, but I cannot make you listen as Allah told to Muhammad (S.A.W) in Quran:

    You (S.A.W) can not make a def listen, even the def is not heading towards you.

    • Dear! That is what happens to the most “Beghairat, Ehsan Framosh and Manhoos” Qaum, who’s Army Chief (after 40 years of Exemplary Army Service), Ex – President of Pakistan (people distributed sweets on his arrival and brought Pakistan in 11 Top Most Progressing countries) was found to be a “Ghaddar” 6 years after his resignation ,

    • For me, you seem to be the def, Allah is referring in Quran Majeed. You are among the ones Allah is referring as “Aur Jab in se kaha jata hey key zameen main fasad na dalo tu kehtey hein, hum to islah karney waly hien.. dekho, ye bila shuba mufsid hein, magar khabar nahin rakhtey”… so you also don’t know what you are saying and what you are doing. In opposing Musharraf, you want to support Taliban terrorism? Just think again and gain and read this column again.

    • The funniest and most tragic part is that the humiliation of ex Pakistan Army Chief in the name of “Ghaddari” is being enjoyed equally by the Indian Hindus and Pakistani politicians and judges. Should we, the general public take it that Pakistan Army Chief did Ghaddari with Indian Hindus, Pakistani politicians and judges equally? That means that all those politicians and judges, who are known for looting and plundering, Pakistan and taking away or investing that looted wealth in India, Saudi Arab, UK, France and Taiwan are all loyalist and true patriots. Then why we, the general public should not become patriots similar to our politicians and judges.
      Indian General VK Singh openly appreciated the courage of Musharraf for staying with troops 15 miles inside Indian territory and accused Indian Intelligence Agencies to be ineffecient. Whereas you trying to be funny by calling him Coward, donn’t know, which one is “Beghairat” lier?

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s